شان رسالت بزبان سیدنا ابوطالب رضی اللہ عنہ

1 لَقَدْ أکْرَمَ اللّٰہُ الْنَّبَِّ مُحَمَّداً،فَاکْرَمَ خَلْقِ اللّٰہ فِْ الْنَّاسِ أحْمَدٍ2 وَشَقَّ لَہُ مِنْ سْمِہ لِیُجَلَّہفَذُوْ الْعَرْشِ مَحْمُوْد وَ ھٰذَا مُحَمَّدٍترجمہ۔1. یقینا خداوند ِعالم نے حضرت محمد کو منزلت وکرامت سے سرفراز فرمایا ہے کہ خداوند ِ عالم کی تمام مخلوقات میں سب سے بلند مرتبہ حضور ِاکرم کی ذاتِ گرامی قدر کاہے2. خدا نے اُن کے جلال وقدر کے لیے اُن کے نام کو بھی اپنے نام ہی سے مشتق کیا چنانچہ و ہ صاحب ِعرش محمود ہے اور یہ محمد ۖہیں مُحَمَّدتَفْدِنَفْسَکَ کُلُّ نَفْسٍذَا مَا خِفْتَ مِنْ شَیٍٔ تِبَالاًاے محمد !میرے نورِنظر ،اگر کسی خطرے یا مصیبت وپریشانی … Continue reading شان رسالت بزبان سیدنا ابوطالب رضی اللہ عنہ

حضرت علی کرم اللہ وجہہ کی شخصیت: ایک جائزہ — جمیل اصغر جامی

کئی دنوں سے سوچ رہا ہوں کہ جناب علی المرتضٰی کرم اللہ وجہہ کی شخصیت پر کچھ لکھوں، لیکن حقیقت یہ ہے کہ ہر بار اپنی علمی اور ذہنی کم مائیگی آڑے آجاتی ہے۔ کئی بار لکھا، لیکن مٹا دیا، اس شدید احساس ندامت کے ساتھ کہ موضوع سے ناانصافی ہو رہی ہے۔ میرے خیال میں جناب علی مرتضی کی شخصیت ایک عظیم ترین امتراج ہے جس کی کوئی دوسری مثال ہمیں نہ صرف اپنی تاریخ بلکہ تاریخ عالم میں بھی بہت کم ملتی ہے۔ کسی بھی انسانی شخصت کے بنیادی طور پر تین پہلو ہوتے ہیں: عقل، عرفان، شجاعت۔ … Continue reading حضرت علی کرم اللہ وجہہ کی شخصیت: ایک جائزہ — جمیل اصغر جامی

Hadith: Discussion of validity and authenticity

Background Because hadith is “the basis for most” Islamic laws and codes “at the detailed level”, which pertain “to people’s life, honour and property”, and because many (especially revivalist and conservative Muslims) consider these not just inspirational or informational but laws “sacrosanct or immutable Shari’ah” to be enforced, and because to others (especially modernist and liberal Muslims) the laws thus developed are “contrary to the intent and spirit of the Qur’an and Islam’s fundamental commitment to justice and fairness”, the “problem of the authenticity of the Sunnah” or hadith has become an issue for those (especially modernist and liberal Muslims) … Continue reading Hadith: Discussion of validity and authenticity

سلطنت عثمانیہ میں بھائیوں کو ہلاک کرنے کی روایت اور ترکوں کے جانشینی کے اصول

بی بی سی اردو سنہ 1595 کا ایک دن۔ سلطنت عثمانیہ اپنے عروج پر ہے۔ یہ وہ دن ہے جب اس وقت کی سپر پاور کا اقتدار سلطان مراد سوم کے انتقال پر ان کے بیٹے محمت کو مل چکا ہے جو اب سلطان محمت سوم ہیں۔لیکن اس دن کو تاریخ میں جس وجہ سے یاد رکھا جاتا ہے وہ شاید استنبول میں شاہی محل میں نئے سلطان کی آمد سے زیادہ وہاں سے 19 شہزادوں کے جنازوں کا نکلنا تھا۔ یہ جنازے نئے سلطان محمت سوم کے بھائیوں کے تھے جنھیں سلطنت میں اس وقت رائج بھائیوں کے قتل … Continue reading سلطنت عثمانیہ میں بھائیوں کو ہلاک کرنے کی روایت اور ترکوں کے جانشینی کے اصول

تحریکِ خلافت اور ابو الکلام آزاد

قاضی محمد عدیل عباسی پکے خلافتی اور کانگرسی تھے۔ اپنی مشہور کتاب “تحریکِ خلافت” میں انھوں نے بدلائل ثابت کیا ہے کہ 1920 میں ہجرت کا فتویٰ مولانا عبد الباری نے نہیں بلکہ مولانا ابوالکلام آزاد نے دیا تھا۔ اس فتویٰ میں انھوں نے لکھا تھا:“تمام دلائل شرعیہ حالات حاضرہ و مصالحِ مہمہ امت اور مقتضیات و مصالح پر نظر ڈالنے کے بعد پوری بصیرت کے ساتھ اس اعتقاد پر مطمئن ہو گیا ہوں کہ مسلمانان ہند کے لیے بجز ہجرت کوئی چارہ شرعی نہیں۔ ان تمام مسلمانوں کے لیے جو اس وقت ہندوستان میں سب سے بڑا اسلامی عمل … Continue reading تحریکِ خلافت اور ابو الکلام آزاد

اہلِ سنت والجماعت کی لغوی سند

.ملا علی قاری نے شرح فقہ اکبر میں لکھا ہے کہ شیخ ابوالحسن اشعری معتزلہ کے بہت بڑے مبلغ تھے، اپنے استاد سے اختلاف کرکے معتزلہ مذہب چھوڑ دیا اور ان کے رد پر کمربستہ ہوگئے۔ ان کا رد انھوں نے سنت کے ذریعہ کیا اور اپنی جماعت کا نام اہلِ سنت والجماعت رکھا۔ انھوں نے یہ جماعت شیعہ کے مقابلہ میں نہیں بلکہ معتزلہ کے مقابلہ میں بنائی تھی۔ معتزلہ اکثر حنفی المذہب ہوتے تھے لیکن دوسرے مذاہب کے لوگ بھی معتزلہ ہوتے تھے۔ خود ابوالحسن اشعری شافعی المسلک تھے۔ چنانچہ اہلِ سنت والجماعت کے باقاعدہ نام سے سب … Continue reading اہلِ سنت والجماعت کی لغوی سند

داراشکوہ: شاہ جہاں کا لاڈلا ’مفکر، شاعر اور صوفی‘ ولی عہد

ریحان فضلبی بی سی ہندی ، دلی 22 جنوری 2020 مغلیہ سلطنت کے بارے میں مشہور ہے کہ وہاں ہمیشہ ایک فارسی کہاوت عام ہوا کرتی تھی ‘یا تخت یا تابوت’۔ اگر ہم مغلیہ تاریخ کے صفحات کو پلٹ کر دیکھیں تو ہمیں معلوم ہوگا کہ مغل بادشاہ شاہ جہاں نے نہ صرف اپنے دو بھائیوں خسرو اور شہریار کی موت کا حکم دیا تھا، بلکہ سنہ 1628 میں تخت سنبھالنے کے بعد اپنے دو بھتیجوں اور چچا زاد بھائیوں کو بھی ہلاک کروا دیا تھا۔ یہ روایت شاہ جہاں کے بعد بھی برقرار رہی ان کے بیٹے اورنگزیب نے … Continue reading داراشکوہ: شاہ جہاں کا لاڈلا ’مفکر، شاعر اور صوفی‘ ولی عہد

تکفیری انتہاپسندوں کی جانب سے خانہ کعبہ کا محاصرہ: 38 سال پہلے کیا ہوا تھا

عابد حسین بی بی سی اردو ڈاٹ کام، اسلام آباد سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے حال ہی میں امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ ‘ہم ملک میں اسلام کو اس کی اصل شکل میں واپس لے جانا چاہتے ہیں اور سعودی معاشرے کو ویسا بنانا چاہتے ہیں جیسا وہ 1979 سے پہلے تھا۔’ اس حوالے سے کئی لوگوں کے ذہن میں یہ سوال اٹھا کہ 1979 میں ایسا کیا ہوا تھا جس نے سعودی معاشرے کی شکل تبدیل کر دی تھی؟ 1979 کو ویسے تاریخ میں اور واقعات کی … Continue reading تکفیری انتہاپسندوں کی جانب سے خانہ کعبہ کا محاصرہ: 38 سال پہلے کیا ہوا تھا