Tolerance vs Inclusion: Lesson from Neelam Ghar

Dr Jawad Syed In this brief clip from a popular TV show (Neelam Ghar, later renamed as Tariq Aziz show) in 1990s in Pakistan, the host (Tariq Aziz) in simple words explains what many people have a real difficulty in understanding, i.e., the difference between tolerance and appreciation/inclusion. The Urdu/Hindi words that Tariq Aziz uses in his explanation are bardaasht (tolerance) and pasand (liking or appreciation). He says that the essence of democracy is the appreciation (not tolerance) of differences. It’s surprising to see that several leaders and organizations in the world today still describe tolerance as one of their … Continue reading Tolerance vs Inclusion: Lesson from Neelam Ghar

اس سے قبل ان کے خاندان کے تیرہ افراد خوارج کی دہشت گردی کا نشانہ بن چکے ہیں

ملک دشمن تکفیری خوارج طالبان سپاہ صحابہ کی ایک اور دہشت گردی۔ سوات کی ممتاز شخصیت جاوید اللہ خان ٹارگٹ کلنگ میں شہید- اس سے قبل ان کے خاندان کے تیرہ افراد خوارج کی دہشت گردی کا نشانہ بن چکے ہیںتجزیہ کاروں کے مطابق یہ واقعات ظاہر کرتے ہیں لہ طالبان، سپاہ صحابہ لشکر جھنگوی، داعش اور اس قبیل کے دیگر تکفیری خوارج ہر فرقے، مذہب اور لسانی گروہ کے دشمن ہیں اور انسانیت کے لیے زہر قاتل ہیں—-سوات: شدت پسندی کی نذر ہونے والے اپنے خاندان کے چودہویں فردمحمد زبیر خانصحافی27 فروری 2020صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع سوات میں … Continue reading اس سے قبل ان کے خاندان کے تیرہ افراد خوارج کی دہشت گردی کا نشانہ بن چکے ہیں

سنی شیعہ فسادات کرنے کی سازش پاک فوج نے بے نقاب کر دی

سانحہ راجہ بازار راولپنڈی – ٢٠١٣ عاشورہ کے موقع پر سنی شیعہ فسادات کرنے کی سازش پاک فوج نے بے نقاب کر دیتکفیری خوارج نے کالے کپڑے پہن کر اپنے ہی دیوبندی مسلک کی مسجد پر حملہ کیا تاکہ ملک میں فرقہ وارانہ فسادات شروع ہوں ڈی جی آئی ایس پی آر آصف غفور کی گفتگو ضرور سنیں- مجرموں کی زبانی ان کا اقبال جرم Continue reading سنی شیعہ فسادات کرنے کی سازش پاک فوج نے بے نقاب کر دی

پاکستانی معاشرے میں شدت پسندی و عدم برداشت کی تاریخ، وجوہات اور ان کا تدارک۔حمزہ ابراہیم

اکثر یہ سمجھا جاتا ہے کہ موجودہ زمانہ برصغیر میں مذہبی تشدد کے لحاظ سے بدترین ہے۔ساٹھ اور ستر کی دہائی میں کراچی کے کلفٹن جیسے علاقوں میں کچھ لوگوں کی شراب نوشی کی تصویریں دیکھ کر یہ سمجھا جاتا ہے کہ ماضی میں پورا پاکستان ایسا تھا۔ اگرچہ کلاشنکوف اور بم کے عام ہو جانے سے شیعہ کشی کی وارداتیں بہت بڑھی ہیں، لیکن شیعہ اور سنی عوام میں تناؤ کے لحاظ سے عروج کا زمانہ پچھلی صدی کا پہلا نصف حصہ تھا۔ اس کے بعد سے یہ تعلقات بہتری کی طرف مائل ہیں۔تاریخی عمل سست ہوتا ہے اسلئے … Continue reading پاکستانی معاشرے میں شدت پسندی و عدم برداشت کی تاریخ، وجوہات اور ان کا تدارک۔حمزہ ابراہیم

پرانے لاہور میں عزاداری۔۔حمزہ ابراہیم

بیسویں صدی کے ادیب، مولوی نور احمد چشتی،   نے لاہور کی تہذیب کے بارے میں  اپنی کتاب ”یادگارِ چشتی“   (سنِ تصنیف  1859ء) میں  اس صدی  کے  لاہور میں عزاداری کا نقشہ  بھی پیش کیا ہے۔  ذیل میں اس کتاب سے متعلقہ  اقتباسات کو چن کر  مختلف عنوانات کے تحت پیش کیا گیا ہے:۔ کربلا کی یاد سے سالِ نو کا آغاز ” اہل اسلام کا سالِ نو ماہِ غم، یعنی محرم، جس کو پنجابی زبان میں ”دہے “ کہتے ہیں، سے شروع ہوتا ہے۔ یہ مہینہ  ہمارے نزدیک بہت غم و الم کا ہے کیوں کہ اس میں جناب حضرت … Continue reading پرانے لاہور میں عزاداری۔۔حمزہ ابراہیم

بھارت کے مسلمانوں میں اصلی سیکولر سیاست کی لہر۔۔حمزہ ابراہیم

بھارت میں شہریت کا نیا قانون منظور ہوا ہے جس کے مطابق صرف ان غیر ملکیوں کو بھارت کی شہریت دینے کا اعلان کیا گیا ہے جو مسلمان نہیں ہیں۔ اس طرح آسام اور بنگال میں بنگلہ دیش اور برما سے آنے والے مسلمانوں کے ساتھ مذہبی بنیادوں پر امتیاز برتا گیا ہے۔ لیکن خوش آئند بات یہ ہے کہ ملک بھر کے مسلمان نوجوان طلبہ میں احتجاج کی لہر پیدا ہو گئی ہے اور جدید عقلی علوم حاصل کرنے والے طلبہ نے علماء کی سیاست کو مسترد کر دیا ہے۔ جامعہ ملیہ اسلامیہ اور علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں … Continue reading بھارت کے مسلمانوں میں اصلی سیکولر سیاست کی لہر۔۔حمزہ ابراہیم

پاکستان کی حالت کھسیانی بلی جیسی : مولانا محمود مدنی

جمعیۃ علما ہند کے ناظم اور سرکردہ دیوبندی عالم مولانا محمود مدنی نے پاکستان کے ذریعہ جنگ کی دھمکیوں کو مسخرہ پن قرار دیا ہے۔ قومی دار الحکومت دہلی میں بھارت کے مشہور عالم دین اور جمعیۃ علماء ہند کے ناظم مولانا محمود مدنی نے پاکستان کے ذریعہ جنگ کی دھمکیوں کو مسخرہ پن قرار دیتے ہوئے کہا کہ ‘پاکستان کی حالات ‘کھسیانی بلی کھمبا نوچے’ جیسی ہے۔ ان سے کچھ نہیں ہوتا تو یہ سب کہتے ہیں’۔ انہوں نے مزید کہا کہ ‘ان کی دھمکیوں کا جواب دینے کے لیے حکومت ہے ، جو جواب دیں گے’۔ پاکستان کے … Continue reading پاکستان کی حالت کھسیانی بلی جیسی : مولانا محمود مدنی

جاوید غامدی کا جنرل ضیاء الحق اور افغان جہاد بارے بیانیہ کیا تھا؟

بدلتے حالات كے ساتھ متجددین کی تعبیرات بھی رنگ بدلتی رہی ہیں۔ لیكن اس معاملے میں جدید اسلام علمی دیانت كے اصولوں كی كیسی خلاف ورزی كا مرتكب ہوسكتا ہے اس كا اندازہ ہمیں اس وقت ہوا جب ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں جاوید غامدی صاحب نے افغان جہاد كے بارے میں گفتگو كرتے ہوئے یہ ارشادات فرمائے۔ ایك سائل، ڈاكٹر الطاف قادر صاحب، نے کہا:’’جن لوگوں نے افغان جہاد كی سرپرستی كی، اور قبائلی علاقے كے لوگوں كو استعمال كیا، ان لوگوں كو سزا دی جائے۔‘‘اس پر جاوید احمد غامدی صاحب نے فرمایا:“مجھے اِن سے سو فیصد اتفاق ہے۔ … Continue reading جاوید غامدی کا جنرل ضیاء الحق اور افغان جہاد بارے بیانیہ کیا تھا؟

یومِ شہادتِ علیؑ، قائد اعظم محمد علی جناح اور تکفیری علما

حمزہ ابراہیم 21 رمضان کو برصغیر میں حضرت علیؑ کرم اللہ وجہہ کی شہادت کی مناسبت سے یومِ علیؑ کے طور پر سوگ کا دن سمجھا جاتا ہے۔ 1944 میں مہاتما گاندھی قائد اعظم سے مذاکرات کرنے بمبئی آ ئے تو قائد اعظم نے 7 ستمبر کو حضرت علیؑ کے یوم شہادت کی وجہ سے ملاقات سے معذرت کی اور مذاکرات 9 ستمبر کو شروع ہوئے۔ اس بات پر لکھنؤ میں مجلس الاحرار کے رہنما مولانا ظفر الملک بھڑک اٹھے اور قائد اعظم کو کھلا خط لکھ کر کہا: ’’مسلمانوں کا 21 رمضان سے کوئی لینا دینا نہیں، یہ خالص … Continue reading یومِ شہادتِ علیؑ، قائد اعظم محمد علی جناح اور تکفیری علما