بدترین فرقہ پرست جماعت اہل حدیث ہیں: ڈاکٹر اسرار کے فرقہ وارانہ نفرت پر مبنی رویے

اپنی تقریروں میں ڈاکٹر اسرار احمد نے مختلف مکاتیب فکر پر رکیک حملے کیے ہیں اور ان پر کفر، شرک اور بدعت کے الزامات لگائے ہیں – اب اس تقریر میں ڈاکٹر اسرار احمد اہل حدیث کو نشانہ بنا رہے ہیں – ڈاکٹر صاحب کہتے ہیں کہ: “میں یہاں عرض کروں گا کہ اہل حدیث تحریک جو ہے وہ بھی ایک زمانے میں بہت زور دار طریقے سے رد بدعات، مشرکانہ اوہام کی نفی کے لیے اٹھی تھی۔ لیکن بہت جلد یہ تحریک صرف چند شعائر تک خود کو محدود کر کے انتہائی تنگ نظر فرقے کی صورت اختیار کر گئی۔ اس وقت بدترین فرقہ پرستی اہل حدیث میں ہے۔ ساری بحث رفع یدین سے آمین بالخیر سے اللہ اللہ خیر سلہ، بس یہی دو چار مسائل ہیں اس کے علاوہ کسی معاملے کے بارے میں کوئی بحث نہیں۔ کوئی دلچسپی نہیں۔ یہ تو اصل میں بدعات، رسومات، مشرکانہ اوہام کی نفی اور سدباب کرنے کے لیے اٹھے تھے۔ یہ چند مسلک کے مسائل تھے لیکن اب سارا زور ان پر لگایا جا رہا ہے۔ فرقہ پرستی کی بدترین کیفیت اس جماعت میں آ چکی ہے۔”

تمام مسلمانوں کا فرض بنتا ہے کہ فرقہ وارانہ نفرت کی روک تھام کریں اور اتحاد بین المسلمین کی فضا کو قائم رکھیں